جموں کشمیر نیشنل عوامی پارٹی برطانیہ کی جانب سے انڈین ہائی کمیشن لندن کے باہر احتجاجی مظاہرہ کیا گیا

لندن برطانیہ (تیمور لون سے) آج ساری دنیا کے ہر خطہ میں یوم شہید کشمیر پورے جوش و جذبہ کیساتھ منایا جا رہا ہے۔ مقبول بٹ آزادی کا سنبل بن چکے ہیں ریاست جموں کشمیر کا مسئلہ ایک سیاسی مسئلہ ہے اس کو حل کر لیا جائے تو نہ صرف خطہ میں امن ہو جائیگا شوکت مقبول بٹ کا اظہار خیال۔ تفصیلات کے مطابق جموں کشمیر نیشنل عوامی پارٹی برطانیہ کی جانب سے انڈین ہائی کمیشن لندن کے باہر احتجاجی مظاہرہ کیا گیا ۔ مظاہرہ میں برطانیہ بھر سے بڑی تعداد میں کشمیریوں نے شرکت کی اور اپنے شہید کشمیر کو زبردست خراج عقیدت پیش کیا ۔مظاہرین نے خوب نعرہ بازی کی ۔ مظاہرین نے پلے کارڈز اور بینرز اور پلے کارڈز اٹھا رکھے تھے جن پرمقبول بٹ شہید کا جسدخاکی کشمیری قوم کے حوالے کرنے کے مطالبات ،ریاست جموں کشمیر سے قابض فوج کے انخلاء ، قابض افواج کے کشمیریوں پر مظالم کے خلاف، اور ریاست جموں کشمیر کی آزادی کےحق میں نعرے درج تھے ۔ فرزند شہید کشمیر شوکت مقبول بٹ نے احتجاجی مظاہرہ کے دوران میڈیا نمائندگان سے گفتگو کے دوران کہا کہ مقبول بٹ شہید نے ریاست جموں و کشمیر کی آزادی کے لئے اپنی جان کا نذانہ پیش کیا ان کی ساری زندگی آزادی کے لئے جدو جہد میں گزری۔ مقبول بٹ شہید ریاست جموںو کشمیر کے متفقہ لیڈر ہیں اس لئے میں سمجھتا ہوں کہ مقبول بٹ شہید کے جسد خاکی پران کے قانونی ورثاء سے زیادہ اس کشمیری قوم کا حق ہے ۔ جن کی آزادی کے لئے انہوں نے اپنی جان پر دار کو ترجیح دی اپنے خون سے آزادی کیاس تحریک کو جلا بخشی۔ انہوں نے کہا کہ میں پر امید ہوں کہ مقبول بٹ شہید نے جو قربانی دی تھی وہ رائیگاں ہر گز نہیں جائےگی کشمیری قوم بھی دیگر آزاد ممالک کی طر ح آزادی کا سورج طلوع ہوتا ہوا ضرور دیکھے گی ۔ امجد اشرف ، محمود کشمیری ، پروفیسرظفر خان ، پروفیسر نذیر شال ، صابر گل ، ساجد شاہین ، تحسین گیلانی , طاہر بوستان و دیگر رہنماوں نے میڈیا سے گفتگو کے دوران کہا کہ دنیا بھر میں یوم شہید کشمیر منایا جا رہا ہے جو اس بات کو باور کرتا ہے کہ آج کا دن ہی کشمیریوں کے لئے یکجہتی کا دن ہے ۔ مقبول بٹ نے اپنی جان ریاست کی مکمل آزادی اور خودمختاری کے لئے قربان کی تھی جس کا وعدہ انٹرنیشنل کمیوٹی نے کر رکھا ہے ۔ بھارت نے شہید کشمیر کو پھانسی دے کر یہ سمجھا کہ اس نے آزادی کی آواز کو دبا دیا ہے لیکن بھارت کی بھول تھی ۔ جیسا کہ شہید نے کہا تھا کہ ” ہم دشمنوں کے احساب پر سوار رہیں گے” اور آج آپ دیکھ سکتے ہیں کہ آج پوری دنیا میں اسی آواز کی بازگشت سنائی دے رہی ہے۔ رہنماوں کا مطالبہ تھا کہ مقبول بٹ شہید کی جسد خاکی کشمیری قوم کے حوالے کیا جائے پوری کشمیری قوم ان شہید کے جسد خاکی کی منتظر ہے ۔ رہنماوں کا کہنا تھا کہ شہید کشمیرنے اپنی جان کا نذرانہ دے کر کشمیری قوم کو آزادی کا جو شعور بخشا اس پر عمل پیرا رہ کر آزادی کی جدو جہد کو جاری رکھیں گے۔

Jammu Kashmir National Awami Party Protest

Jammu Kashmir National Awami Party Protest

Jammu Kashmir National Awami Party Protest

Jammu Kashmir National Awami Party Protest

Jammu Kashmir National Awami Party Protest

Jammu Kashmir National Awami Party Protest

Jammu Kashmir National Awami Party Protest

Jammu Kashmir National Awami Party Protest

Jammu Kashmir National Awami Party Protest

Jammu Kashmir National Awami Party Protest

Jammu Kashmir National Awami Party Protest

Jammu Kashmir National Awami Party Protest

Jammu Kashmir National Awami Party Protest

Jammu Kashmir National Awami Party Protest

Jammu Kashmir National Awami Party Protest

Jammu Kashmir National Awami Party Protest

Jammu Kashmir National Awami Party Protest

Jammu Kashmir National Awami Party Protest