جنیوا میں اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کے ہیڈ کوارٹر کے سامنے کشمیری کمیونٹی نے احتجاجی مظاہرہ کیا

Kashmiris

Kashmiris

پیرس (زاہد مصطفی اعوان) جنیوا میں اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کے ہیڈ کوارٹر کے سامنے کشمیری کمیونٹی نے احتجاجی مظاہرہ کیا۔ جنیوا کی فضا لے کر رہیں گے آزادی کی نعروں سے گونج اٹھی۔ مظاہرین کا کہنا تھا کہ بندوق کے زور پر کشمیریوں کی جدوجہد آزادی کو دبانہیں سکتا۔ کشمیریوں نے اقوام متحدہ اور انسانی حقوق کی عالمی تنظیموں سے پرزور مطالبہ کیا ہے کہ وہ انسانیت کے بنیادی حقوق پر بھارتی ڈاکہ زنی کو روکے۔ جنوبی ایشیاءکا امن مسئلہ کشمیر کے حل سے وابستہ ہے۔اہل کشمیر کو عالمی سطح پر استصواب رائے کا تسلیم شدہ حق ملنا چاہیے۔مظاہرین نے بینرز اور کتبے اٹھا رکھے تھے ،جن پر نعرے درج تھے۔

مودی حکومت مردہ باد ،کشمیر کی آزادی تک جنگ رہے گی جنگ رہے گی ۔ہم چھین کے لیں گے آزادی ،انڈین آرمی مردہ باد ،انڈین آرمی کشمیر چھوڑ دے ،انڈیا اقوام متحدہ کی قرار دودوں پر عمل کرے اور کشمیر سے نکل جائے۔

مقررین نے مذید کہا کہ مودی حکومت نے پاکستان پر جو فضائی حدود کی خلاف ورزی کی ہے ہم اس کی شدید مذمت کرتے ہیں ،اور اقوام متحدہ سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ خطے کے امن کے لئے بھارت کے خلاف ٹھوس لائخہ عمل بنائے ،اور اسے پابند کرے ،وگرنہ پاک فوج ،پاک فضائیہ اور پاک نیوی دشمن کے تمام تر منصوبے خاک میں ملا دیں گے ۔جنیوا میں ہونے والے اس مظاہرے میں پیرس سے مرزا آص جرال ،نعیم چوہدری ،اور معروف صحافی یونس خان بھی شریک ہوئے۔